کچھ عشق کيا، کچھ کام کيا

Tuesday,12 April 2005
از :  
زمرات : میری پسند, اردو

وہ لوگ بہت خوش قسمت تھے
جو عشق کو کام سمجھتے تھے
يا کام سے عاشقی کرتے تھے
ہم جيتے جی مصروف رہے
کچھ عشق کيا، کچھ کام کيا
کام عشق کے آڑے آتا رہا
اور عشق سے کام الجھتا رہا
اور پھر آخر تنگ آ کر ہم نے
دونوں کو ادھورا چھوڑ ديا

تبصرہ جات

“کچھ عشق کيا، کچھ کام کيا” پر 10 تبصرے کئے گئے ہیں
  1. سا ئر ہ عنبر ین says:

    ماشااللہ بہت اچھی سوچ ہے۔

  2. شعیب صفدر says:

    دل چھوٹا مت کرے جناب اس کام کو دوبارہ شروع کتے ہماری دعا اور اپنی محنت سے آپ عشق میں کامیاب ہو جائے گے ۔۔۔۔مزاق ہے

  3. SHAPER says:

    ISHIQ ….. Nothin just a game

  4. Anonymous says:

    umm acha kya!

    miss mughal

  5. جہانزيب says:

    @saira kaam adhoora chor diya yeh achi soch hai 😐

    @shuaib ab pehlay aap wazahat karain aap kis kaam ko dobara shoroh karne ka keh rahay hain 😛

    @shaper varies from person to person some people like to be called player and some likes to be played

    @missi yeah acha kya jo kaam chod ker beth giya :@ ghar walon ki itni baatain kon sunay :-s

  6. Anonymous says:

    sahii kaha…….jinab

    miss mughal

  7. SAILOR says:

    THESE ARE ALL LIES I KNOW ALL THE TRUTH ABOUT THIS PERSON

  8. Zeeast says:

    aap tu kamal hein……

  9. Anonymous says:

    🙁 very nice 

    Posted by Anonymous

  10. Anonymous says:

    یقیں ہے کہ نا آئے گا مجھ سے ملنے کوئی
    تو پھر یہ دل کو میرے انتظار کیسا ہے؟

    :(:(:( 

    Posted by Anonymous

تبصرہ کیجئے

اس بلاگ پر آپ کے تبصرہ کی حوصلہ افزائی کی جاتی ہے
اگر آپ اپنے تبصرہ کے ساتھ تصویر لگانا چاہتے ہیں، تو یہاں جا کر تصویر لگائیں ۔