سمندری طوفان

Monday,29 August 2005
از :  
زمرات : امریکہ

نيو آرلينز میں کٹرينا سے تباہی


امريکہ کی مشرقی جنوبی رياستيں آج کل شديد سمندری طوفان کٹرينا کی لپيٹ ميں ہيں۔ اس سمندری طوفان کی شدت سکيل پر ٥ بتائی گئی ہے جو کہ سب سے زيادہ شديد ہوتا ہے۔
ان رياستوں ميں يہ سمندری طوفان آنا ايک معمول کی بات ہے مگر اس طرح کا شديد طوفان تاريخ ميں صرف تيسری بار آيا ہے پہلی دفعہ ١٩٦٩ ميں پھر ١٩٩٢ ميں مگر ان دونوں طوفانوں کی شدت سکيل پر ٣ تھی۔ ١٩٦٩ ميں آنے والے طوفان سے ايک بلين ڈالر کا نقصان ہوا تھا اور يہ ١٩٦٩ کے ڈالر کے حساب سے ہے۔
اس حاليہ طوفان ميں سب سے زيادہ متاثر ہونے والا شہر نيو آرلينز ہو گا جو کہ سطح سمندر سے ٦ فٹ نيچے ہے اور اس شہر ميں ٢٨ فٹ تک پانی داخل ہونے کا خدشہ ظاہر کيا گيا ہے۔ نيو آرلينز امريکہ کا مشہور ترين بحری بندگاہ کا حامل شہر ہے۔ اس کے علاوہ بے آف مکسيکو ميں سب سے بڑی آئل ريفانری قائم ہے جس کو ہنگامی صورتحال ميں بند کر ديا گيا ہے تيل کی قيمتيں جن کو پچھلے ہفتے ہی ٦٠ ڈالر بيرل سے بڑھا کر ٧٠ ڈالر بيرل کيا گيا تھا کے بارے ميں خدشہ کيا جا رہا ہے کہ ١٠٠ ڈالر فی بيرل تک پہنچ سکتی ہيں۔ اس وقت صرف نيويارک ميں ايک ہفتے ميں تيل ٢ ڈالر فی گيلن سے ٤ ڈالر گيلن تک پہنچ چکا ہے۔
نيو آرلينز شہر کو کل ہی خالی کرا ديا گيا تھا اور رہائشيوں کو قريبی رياستوں ميں بھيج ديا گيا ہے۔ ميری تايا زاد بہن بھی وہاں رہتی ہيں جو کہ کل ہيوسٹن ميں منتقل ہو گئی تھيں۔ مگر سب سے بڑا مسلہ جو کل تک تھا کہ تقريبا ١٠ لاکھ ايسے افراد تھے جن کے پاس دوسری رياستوں ميں جانے کے لئے پيسے نہيں تھے انکو ريڈ کراس اور وفاقی حکومت کی مدد سے دوسرے شہروں ميں بھيجا گيا ہے۔ اور اس طوفان کے بعد نيو آرلينز سے پانی نکالتے ہفتوں لگ سکتے ہيں۔ اللہ سب کو اپنی پناہ ميں رکھے جانی نقصانات کو کم کرنے کے جتنے اقدامات کئے جا سکتے تھے وہ خکومت نے کئے ہيں ليکن اسکے باوجود کچھ لوگوں کے مرنے کی اطلاعات آ رہی ہيں۔ طوفانی ہواؤں کی رفتار ١٥٠ ميل گھنٹہ بتائی جا رہی ہے۔ نيو آرلينز ايک ايسا شہر ہے جہاں رہنے والوں کو ہر سال اسی طرح کے خطرات کی وجہ سے نکل مکانی کرنا پڑتی ہے۔ اور شہر ميں ايسے انتظامات ہيں کہ وہاں پناہ لی جا سکتی تھی مگر اس طرح کے خطرناک طوفان ميں پہلی بار ايسا ہوا ہے کہ شہر کے تمام مکينوں کو شہر خالی کرنا پڑا ہے۔ اسکے علاوہ نيو آرلينز کے بارے ميں کہا جاتا ہے کہ اگلی دو صديوں ميں يہ شہر سمندر کا حصہ بن جائے گا کيونکہ بحر الکاہل کی سطح آب مسلسل بڑھ رہی ہے
نيوآرلينز کے علاوہ يہ طوفان مسسيسپی اور فلوريڈہ کے علاقوں تک بھی جائے گا۔

ويسٹ پالم بيچ ميں کٹرينا کی آمد

ميامی بيچ کٹرينا کی آمد سے پہلے

تبصرہ جات

“سمندری طوفان” پر ایک تبصرہ ہوا ہے
  1. Anonymous says:

    Oh!Allah sab pay raham keray….Ameen

    lalah 

    Posted Anonymous

تبصرہ کیجئے

اس بلاگ پر آپ کے تبصرہ کی حوصلہ افزائی کی جاتی ہے
اگر آپ اپنے تبصرہ کے ساتھ تصویر لگانا چاہتے ہیں، تو یہاں جا کر تصویر لگائیں ۔