میرا ووٹ

November 4, 2008
از :  
زمرات: امریکہ

لو مجھے لگتا ہے، میرا پہلا ووٹ ضائع ہو گیا ہے ۔ وجہ بورڈ آف الیکشن کی معلومات ہیں ۔ میں نے کل رات سونے سے پہلے بورڈ آف الیکشن کی ویب سائٹ پر پورے آدھا گھنٹہ ویڈیو دیکھی کہ ووٹ کس طرح ڈالنا ہے ۔ ویب سائٹ پر میرے علاقے میں جو مشین استعمال ہونی تھی، وہ کچھ یوں ہے ۔

جبکہ حقیقت میں جس مشین پر میں نے ووٹ دیا وہ کچھ یوں تھی جیسے کسی پرانے بجلی گھر کا کنٹرول روم ۔ آپ کے سامنے ایک سفید دیوار جیسا پھٹا لگا تھا، جہاں سب سے اوپرپارٹی کا نام لکھا تھا، دوسری قطار میں ان کے نیچے امیدواروں کے نام لکھے تھے، پھر سب سے نیچے لوکل امیدواروں کے نام ترتیب سے لکھے تھے ۔ اور ہر امیدوار کے سامنے ایک جیسے پاکستان میں پنکھوں کی رفتار بڑھانے یا کم کرنے کے لئے ریگولیٹر ہوتے ہیں، ویسا ایک ریگولیٹر بنا تھا۔ میں جا کہ پہلے آرام سے ریگولیٹر گھمانے کی کوشش کرتا رہا، جب نہیں گھوما تو پھر میں نے جس کو ووٹ نہیں دینا تھا، وہاں کوشش کی، مگر ریگولیٹر تھا کہ گھومنے کا نام ہی نہیں لے رہا تھا ۔ پھر زور آزمائی کی، مگر کوئی فائدہ نہیں ہوا ۔ سامنے دیوار پر معلومات پڑھنے کی کوشش کی، تو کوئی سمجھ نہیں آئی ۔ پھر پولنگ بوتھ سے نکل کر باہر کھڑی ایجنٹ کو کہا، میری مدد کرو ۔ اس نے بھی اندر آ کر زور آزمائی کی، پھر کہنے لگی مجھے نہیں پتہ ۔ اچانک کہتی ہے تم نے نیچے لگا لیور دبایا ہے؟ میں حیران کہیڑا لیور ؟

دیکھا تو ایک عدد لیور لگا تھا، جیسے پاکستان میں ریلوے سٹیشن پر ٹرین کی پٹریاں بدلنے کے لئے لگا ہوتا ہے، پہلے اسے بائیں سے دائیں گھمایا، پھر اپنے امیدوار کے سامنے ریگولیٹر کو گھمایا۔ یہ سب کرنے کے بعد میں نے اخیر میں دوبارہ سے لیور کو بائیں سے دائیں کر دیا، تو جس امیدوار کو چنا تھا، اس کے سامنے سے ڈبا ہٹ گیا ۔اب مجھے یہ فکر ہے کہ ووٹ ڈل گیا ہے کہ نہیں؟

سب سے مزے کی بات یہ کہ جب میں تنگ آ کر باہر نکل گیا، تو نکلتے ہی سامنے ہدایات لکھی تھیں کہ مشین کیسے استعمال کرنی ہے ۔لیکن میں واپس بوتھ میں نہیں جا سکتا تھا ۔

بہرحال اگر ایسی مشینیں پاکستان میں ہوں، تو دھاندلی والوں کے مزے ہو جائیں، اور مجھے بورڈ آف الیکشن پر غصہ ہے کہ دکھایا کچھ اور تھا کچھ اور۔ میں تو رات خواب میں بھی ویڈیو والی مشین پر ووٹ دیتا رہا تھا ۔

دوسری بات میں اس دفعہ الیکشن میں لگی قطاریں دیکھ کر حیران ہوا ہوں، نیویارک میں ویسے بھی اوبامہ جیت جائے گا، اس کے علاوہ اتنی لمبی قطاریں، جبکہ پچھلے الیکشن میں ایسا کوئی چکر نظر نہیں آیا تھا، ہمارے گھر کے سامنے سکول میں ووٹنگ تھی، اور قطار سکول سے باہر پورے ایک بلاک پر محیط تھی ۔ کیمرہ ہوتا تو ضرور تصویر بنا کر لگاتا، کیونکہ بہت سے لوگ تو پولنگ سٹیشن کے اندر بھی تصاویر اتار رہے تھے، آخر کو فلکر پر جو لگانی ہیں ۔

دائیں طرف مرو

October 18, 2008
از :  
زمرات: میری پسند

ساجد اقبال کے فلکر پر یہ تصویر دیکھی ۔ زبردست مشاہدہ ہے ۔

بائیں مڑنا منع  ہے ۔