لندن دھماکے اور پاکستان

Thursday,21 July 2005
از :  
زمرات : پاکستان, مذہب, سیاست

دو ہفتے قبل ہونے والے دھماکوں کی بازگشت ابھی ختم نہيں ہوئی تھی کہ آج صبح دوبارہ نئے سرے سے تخريب کار دوبارہ سرگرم ھو گئے۔۔ليکن ان دھماکوں سے کچھ سياسی دھماکے بھی پيدا ھوئے ھيں کہ اس سے فرق نہيں پڑتا آپ کس ملک ميں پيدا ھوئے يا پروان چڑھے جو اصل چيز ھے وہ يہی ہے کہ آپکا نسلی تعلق کس خطے سے ہے۔۔دھماکوں کے فورا بعد تحقيات آتے ہی کسی ايک جگہ بھی نہيں آيا کہ ايسا کرنے والے برطانوی ہی تھے بلکے فورا ان کے نسلی تعلق کو بنياد بنا کر واويلا کرنا شروع کر ديا کہ پاکستانی نے ايسا کر ديا۔۔ اور پاکستان کی شہرت ميں اور اضافہ کا باعث بنے۔۔اس پر سب سے زيادہ افسوس پاکستان کی خارجہ پاليسی اور حکومت پاکستان پر ھوا کہ دو ہفتے تک کسی نے اس بارے ميں ايک لفظ نہيں کہا اور جب ملک کا نام چاروں طرف روشن ھو گيا اور باقی تمام دنيا جو دو ہفتے تک پاکستان پاکستان کا نام سنتی رہی اسکو اب جناب پرويز مشرف دو ھفتے بعد آ کر مٹانے کی کوشش کر رھے ہيں؟کيا جس زور شور سے اس وقت پاکستان کا نام ليا جا رہا تھا اس وقت حکومت خاموش تماشائی کس لئے بنی بيھٹی رھی؟ يا جو تمام ممالک جن ميں لوگوں نے يہ يقين کر ليا اس خبر کے بعد کہ پاکستانی تو ھوتے ہی ايسے ہيں وياں اسی زور سے پرويز مشرف صاحب کا بيان سنا گيا ہو گا؟ نہيں بلکے آدھی سے زيادہ دنيا ميں يہ خبر سنی بھی نہيں گئی ہو گی۔۔ تو جب سانپ گزر چکا تو بعد ميں واويلا کرنے کا فائدہ۔۔ ميں مانتا ہوں کہ دير آيد درست آيد مگر بعض اوقات يہی دير سنگين غلط فہميوں کو پيدا کرتی ھے اور ميں يہ سمجھنے قاصر ہوں کہ حکومت کو يہ فيصلہ کرتے اتنی دير کيسے لگی۔۔
ان دھماکوں کی تحقيقات سے ايک دفعہ پھر بش انتظاميہ کی ياد تازہ ہو گئی ہے کہ ايک حملہ آور حسيب جس کا پاسپورٹ وياں سے ملا تھا نا يہ کہ زندہ ھے بلکہ اسکے پاسپورٹ پر پاکستان سے ہو کے آنے کو ديکھ کر يہ واويلا بھی شروع کر ديا گيا کہ حملہ آور پاکستان ميں مذہبی مدرسوں ميں جا کر آئے ہيں اور اس پر کمال يہ کہ حکومت پاکستان جس سے اپنے ملک ميں ہونے والی دہشت گردی کی تحقيقات نہيں ہوئی انہوں نے اس بات کے ثبوت بھی حاصل کر لئے کہ واقعی حملہ آور مذہبی مدرسوں ميں گئے تھے۔۔۔ يہ تو کمال ہو گيا نا گواہ سست مدعی چست۔۔ايسے ستمبر ٢٠٠١ کے بعد امريکا ميں شروع ہوا تھا کہ جو بندہ مرتا يا تو اسکو مارنے والا مسلمان ہوتا اور اگر مسلمان نہيں ہوتا تو اسکا تعلق القاعدہ سے نکل آتا۔۔امريکا ميں رہنے والوں کو ميری لينڈ کا سنائپر۔۔فرانس سے آنے والا شُو بمبر۔۔ يا شکاگو کا گينگ ليڈر ہوزے شايد ياد ہو۔۔کے جس کے گلے ميں پھندا پورا آ جائے وہی مجرم ہے۔۔ يا شايد دسمبر ٢٠٠٢ ميں کرسمس کے دنوں ميں زور و شور سے اعلان کہ ٥ دھشت گرد کنيڈا کے راستے امريکا ميں داخل ہو گئے ہيں اور نيو يارک پر کوئی حملہ کرنا چاہتے ہيں اور انکی تصاوير تک اخبارات اور ٹي وی پر دکھا دی گئی تو کہاں تھے وہ ٥ لوگ؟ جی باکل وہ سب پاکستان ميں تھے اور ايف بی آئی نے ٹورنٹو سے ايک پاکستانی کو جو يھاں فراڈ کر کے بھاگا تھا کو پکڑا تو اسکے پاس ان ٥ لوگوں کے پاسپورٹ تھے جن کو اس نے امريکا لانے کا جھانسا دے رکھا تھا اور امريکہ نے انکو دہشت گرد بنا ديا۔۔ تو برطانيہ ميں بھی عوام کا منہ بند کرنے کے لئے کسی کے ذمے تو لگانا تھا يہ سب تو حسيب کا پاسپورٹ مل گيا باقی کے جسم مل گئے۔۔۔اچھا حيرانی کی بات يہ ہے کہ ان لوگوں ميں ايک جميکا کا رہنے والا بھی شامل تھا کسی نے بھی اسکا ذکر نہيں سنا صرف پاکستانيوں کی تکرار کيوں کے آج کل مسلمانوں کے گلے ميں پھندا آساني سے آ جاتا ھے۔۔۔
جو پيدا ھی وياں ہوئے ہوں جن کے پاس زندگی ميں پاکستان کی قوميت ايک دن بھی نا آئي ہو وہ پاکستانی کيسے ہيں؟ جو ١٨، ٢٠ سال آپکے سکولوں ميں پڑہے ہوں وہ پاکستان کسی مدرسے ميں جا کر اتنے بدل جاتے ہيں کہ واپس آ کر اپنے جسموں سے بم باندھ ليتے ہيں؟ يا وہ فلانی مسجد جاتے تھے تو کيا باقی لوگ اس مسجد ميں نہيں جاتے تھے يا مسجدوں ميں بم باندھنے کے گُر سکھائے جاتے ہيں؟اگر ايسا ھوتا تو ايک ارب کی آبادی ميں ايک فی صد لوگوں کو تو متاثر ہونا چاہيے تھا؟ اور ايک ارب کا ايک فيصد اگر مسجدوں سے سن کر بم باندھ کر آ جائے تو ايک فی صد کے حساب سے اس وقت ايک کڑور لوگوں کو خود کش حملے کر رہا ہونا چايے تھا اور اگر ايسا ہوتا تو کيا آپ يہ سب کہنے والوں کے پاس کوئی مہلت ہوتی۔۔ صرف سياسی اور اقتصادی فوائد کی خاطر جو اس وقت دنيا ميں ہو ريا ہے اسکو مذہب کا رنگ پہنانے کی کوشش کيوں جا رہی ہے اگر ايسا ھوا تو سب سے زيادہ نقصان کسی اور کو نہيں نسل انسانی کو ہی اٹھانا پڑے گا۔۔

تبصرہ جات

“لندن دھماکے اور پاکستان” پر 4 تبصرے کئے گئے ہیں
  1. افتخار اجمل بھوپال says:

    اےآروائی پر حسیب کے انٹرویو نے ٹونی بلیئر اور پرویز مشرّف دونوں کو جھوٹا ثابت کردیا ہے ۔

    اس سے یہ بھی واضح ہو گیا ہے کہ پاکستان میں مدارس پر چھاپے صرف امریکہ کی حکومت کے حکم پور مارے جا رہے ہیں ۔ 

    Posted by Iftikhar Ajmal Bhopal

  2. اسماء مرزا says:

    Assalam o alaykum w..w!!

    Yeah on part of Paksitan’s govt. it was late … but still der ayad durudt ayad … (remember the Paksitanis who were killed by thier kidnappers in Iraq … not many months ago .. just becoz of this delay )

    Well, for past few yrears its becoming a tradition … anything go worst any where muslims are automatically responsible … esepecially pakistanis …!!!

    But then muslims , few muslms, are wrongly spreading this violence in the name of Islam.

    May Allah clears the paths for every single muslim and all others on this earth.

    Wassalam 

    Posted by Asma

  3. جہانزیب says:

    اس سے یہ بھی واضح ہو گیا ہے کہ پاکستان میں مدارس پر چھاپے صرف امریکہ کی حکومت کے حکم پور مارے جا رہے ہیں ۔
    Posted by Iftikhar Ajmal Bhopal
     ”

    yeah every one knows about it…
    asma yeah it is true that lot of muslims are involved in voilence in past few years but we must acknowldge that it is not because of the religon as they are showing in their media..because islam teaches so thats why muslims are involved…it is as london’s mayor said because of politics and no matter what nation is living under those conditions will do the same thing as he said if we were living in same situation today we do the same thing it is because of wrong policies that super powers implemented in middle east they dont care what goverment people want..they look for a goverment with whom their needs of oil fulfill and put lot of money to bring down the elected goverments…this is what today america and europe facing today not the islam.. 

    Posted by جہانزیب

  4. لالہ رُخ says:

    umm…kal CNN pay newz aa rahi thi..pakistan extremits…ouss mai hussain haqani ..koi sahab thea..kah rahay thea..yes it is true…pak madresaz mai subha early morning..west k helaf tarbeeyat dee jaty hai…bachoo ko training de jaty hai..poor educated pakistani n etc etc

    this is pakistani citizen…disgusting
    mai kahty hou…theek hai weo muslim hain ju ye kar rahay hain..lakin pakistani tu nahi..iuss mai pakistan ka kiya kasoor hai…pakistani hukumat b nahi pochtyy?weo b mazulm banay hovay hain

تبصرہ کیجئے

اس بلاگ پر آپ کے تبصرہ کی حوصلہ افزائی کی جاتی ہے
اگر آپ اپنے تبصرہ کے ساتھ تصویر لگانا چاہتے ہیں، تو یہاں جا کر تصویر لگائیں ۔